آصف زرداری

تسلیم شدہ حقیقت ہے آصف زرداری پبلک آفس ہولڈر تھے، احتساب عدالت کا تحریری فیصلہ

اسلام آباد (گلف آن لائن)احتساب عدالت نے سابق صدر آصف زرداری کیخلاف آٹھ ارب سے زائد کی مشکوک ٹرانزیکشن نیب ریفرنس کے تحریری فیصلہ میں کہا ہے کہ تسلیم شدہ حقیقت ہے آصف زرداری پبلک آفس ہولڈر تھے۔ ہفتہ کو آصف علی زرداری کی درخواست بریت مسترد ہونے کا احتساب عدالت نے تحریری فیصلہ جاری کر دیا جس کے مطابق تسلیم شدہ حقیقت ہے آصف زرداری پبلک آفس ہولڈر تھے، پبلک آفس ہولڈر کے معاملے پر ترمیمی آرڈیننس کا اطلاق نہیں ،

آصف علی زرداری بادی النظر میں اس کیس میں شامل ہیں، آصف علی زرداری پر منی لانڈرنگ اور کرپشن کا الزام ہے۔ فیصلے میں کہاگیاکہ نیب کے مطابق آصف زرداری نے کراچی گھر کی قیمت بھی کاغذات میں کم ظاہر کی، نیب کے مطابق اصل قیمت چھپانے کا مقصد غیر قانونی رقوم چھپانا تھا۔تحریری فیصلہ احتساب عدالت کے جج اصغر علی نے جاری کیا احتساب عدالت نے بریت کی درخواست مسترد کرنے سمیت آصف زرداری کو فرد جرم کیلئے طلب کر رکھا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں