پنجاب اسمبلی

بجلی کی قیمتوں میں 4روپے30پیسے فی یونٹ اضافے اور گیس کی عدم دستیابی کے خلاف مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

لاہور (گلف آن لائن)بجلی کی قیمتوں میں 4روپے30پیسے فی یونٹ اضافے اور گیس کی عدم دستیابی کے خلاف مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروادی گئی ۔مسلم لیگ (ن) کی عنیزہ فاطمہ کی جانب سے جمع کرائی گئی قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ بجلی کی قیمتوں میں ایک بار پھر 4روپے30پیسے فی یونٹ اضافہ کرکے عوام پر روزانہ کی بنیاد پر مہنگائی کے ڈراو ن حملوں کا تسلسل مسلسل نہ رک سکا،پہلے ہی نتیجہ عوام فاقوں اورخودکشیوں پر مجبور ہیں اورگیس کی عدم دستیابی پرسراپا احتجاج ہیں۔

بجلی گیس پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں، مہنگائی،بے روزگاری تاریخ کی بلند ترین سطح پر ہے۔حکومت کے پاس نہ کوئی حکمت عملی ہے اور نہ ہی کوئی مستقبل کی منصوبہ بندی ہے۔ہر روز بگڑتے حالات تقاضا کررہے ہیں کہ آنکھیں کھول کر دیکھا جائے، ملک اور عوام کا سوچا جائے۔

توانائی کی قیمت میں بتدریج اضافہ مہنگائی سے مرتی عوام پر ایک ناقابل برداشت بوجھ ثابت ہوگا۔ یہ ایوان بجلی کی قیمتوں میں اضافے اورگیس کی عدم دستیابی کی شدیدمذمت کرتا ہے۔ قراردا دمیں وفاقی حکومت سے مطالبہ کیاگیا کہ بجلی کی قیمتوں میں کمی اور عوام کی فلاح وبہبود کیلئے فوری اقدامات کیے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں