فواد چوہدری

اگر آئی ایم ایف سے معاہدہ پسند نہیں تو حکومت آئی ایم ایف بورڈ میں کیا لینے جاتی ہے؟فواد چوہدری

اسلام آباد (گلف آن لائن)پی ٹی آئی کے مرکزی نائب صدر فواد چوہدری نے وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کے بیان پررد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری حکومت نے ان 52 ارب ڈالر میں سے 38 ارب ڈالر آپ کی حکومتوں کے لیے گئے قرض کی واپسی کی۔

فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ اگر آئی ایم ایف سے معاہدہ پسند نہیں تو حکومت آئی ایم ایف بورڈ میں کیا لینے جاتی ہے؟ ختم کریں معاملہ اور آگے چلیں۔واضح رہے کہ وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے ٹوئٹ کیا تھا کہ شوکت ترین صاحب نے آخر کار اعتراف کر ہی لیا کہ عمران صاحب نے 4 سال کی حکومت میں 20 ہزار ارب روپے کا قرض لیا جو تاریخ پاکستان میں لیے گئے مجموعی قرض کا 76 فیصد ہے۔ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ایسے بہت سے اعتراف ابھی عمران صاحب نے کرنے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں