گندم و آٹے

حکومت پنجاب کا گندم و آٹے کی اسمگلنگ روکنے کیلئے ضلع بندی کا فیصلہ

ملتان(گلف آن لائن) حکومت پنجاب نے گندم و آٹے کی اسمگلنگ روکنے کیلئے ضلع بندی کا فیصلہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملتان ڈویژن کے چاروں اضلاع کے خارجی راستوں پر ناکے قائم کردیئے گئے ہیں۔ سیکرٹری فوڈ پنجاب نادر چھٹہ کی صدارت میں انتظامیہ و پولیس کا اجلاس ہوا جس میں کمشنر انجینئر عامر خٹک، ڈپٹی کمشنر طاہر وٹو اور ڈپٹی کمشنرز نے شرکت کی۔ اس موقع پر سیکرٹری فوڈ پنجاب نادر چھٹہ نے کہا کہ حکومت پنجاب کی تاریخی سبسڈی کے ثمرات ہر صورت عوام تک پہنچائیں گے۔ نادر چھٹہ نے مزید کہا کہ فلور ملز سے آٹا پوانٹس تک سپلائی چین کی کڑی مانیٹرنگ کررہے ہیں، بغیر پرمٹ گندم کا ایک دانہ ضلع سے باہر نہیں جانے دیا جائے۔ دوسری جانب کمشنر ملتان عامر خٹک نے کہا کہ ڈویژنل انتظامیہ محکمہ فوڈ کو مکمل معاونت فراہم کرے گی، چاروں اضلاع میں ناکوں پر ضلعی انتظامیہ کے ریونیو اہلکار بھی تعینات ہونگے۔

کمشنر ملتان نے مزید کہا کہ ڈپٹی کمشنرز سرکاری کوٹہ کی خلاف ورزی پر فلور ملز کیخلاف کریک ڈاون کریں۔ اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر طاہر وٹو نے کہا کہ شہر اولیا میں سستے آٹے کے 7 سو سے زائد پوائنٹس قائم کئے گئے ہیں اور گندم ذخیرہ اندوزی پر لاکھوں روپے جرمانے اور 10 فلور ملز بھی سیل کی گئی ہیں۔ طاہر وٹو نے مزید کہا کہ عوام کو ریلیف دینے کیلئے سستے آٹے کے پوائنٹس میں مزید اضافہ کرینگے۔ واضح رہے کہ اجلاس میں سیکرٹری فوڈ پنجاب نے ڈویژنل انتظامیہ کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار بھی کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں