عارف علوی

متحدہ عرب امارات کے ساتھ جامع اقتصادی شراکت داری کے معاہدے (سی ای پی اے) کو جلد حتمی شکل دینے کی ضرورت ہے، صدر مملکت

اسلام آباد (گلف آن لائن)صدر مملکت عارف علوی نے کہاہے کہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ جامع اقتصادی شراکت داری کے معاہدے (سی ای پی اے) کو جلد حتمی شکل دینے کی ضرورت ہے۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے متحدہ عرب امارات میں پاکستان کے نامزد سفیر فیصل نیاز ترمذی نے ملاقات کی جس میں صدر مملکت نے کہاکہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ جامع اقتصادی شراکت داری کے معاہدے (سی ای پی اے) کو جلد حتمی شکل دینے کی ضرورت ہے۔ صدر مملکت نے کہاکہ سی ای پی اے سے پاکستان اپنی برآمدات میں اضافہ کر سکے گا ،پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے درمیان باہمی تجارت کو اس کی موجودہ سطح 10.6 بلین امریکی ڈالر سے بڑھاکربہترین تعلقات کا عکاس بنایا جا سکتا ہے ۔صدر مملکت نے کہاکہ دونوں ممالک کے درمیان قابل تجدید توانائی، تجارتی، صنعتی، انفراسٹرکچر اور مہمان نوازی کے شعبوں میں تعاون کے وسیع امکانات موجود ہیں۔

انہوںنے کہاکہ متحدہ عرب امارات میں 1.6 ملین پاکستانی ایک اثاثہ ہیں اور دونوں ممالک کی ترقی میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ امارات میں مقیم پاکستانی تارکین وطن کی طرف سے بھیجی گئی تر سیلات گزشتہ برس 5.814 بلین امریکی ڈالر رہیں ۔صدرمملکت نے پاکستان میں سیلاب زدگان کی امداد پر متحدہ عرب امارات کی حکومت کا شکریہ ادا کیا،انہوں نے فیٹف اور آئی ایم ایف میں متحدہ عرب امارات کی پاکستان کی حمایت کو بھی سراہا۔ صدر مملکت نے کہاکہ متحدہ عرب امارات کی جانب سے پاکستان میں 2.9 بلین امریکی ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کی گئی، آنے والے سالوں میں اس سرمایہ کاری کو بڑھانے کی ضرورت ہے۔

صدر مملکت نے کہاکہ تارکین وطن کے پاکستان کے آن لائن تعلیمی اداروں کے ساتھ ڈیجیٹل روابط پیدا کیے جائیں۔ صدرمملکت نے کہاکہ پاکستانی کمیونٹی کی ڈیجیٹل اسکلز کو بہتر بنانے کے لیے کورسز بھی شروع کیے جائیں، تا کہ وہ اپنی آمدنی میں بہتری لا سکیں۔ صدر مملکت نے کہاکہ وزیر اعظم کے ڈیجی اسکلز ٹریننگ پروگرام کو بھی تارکین وطن میں فروغ دیا جا ئے،سفیر ہندوستان میں اسلامو فوبیا کے بڑھتے ہوئے واقعات اور مسلمانوں کی زندگیوں کو خطرات سے متعلق متحدہ عرب امارات کی قیادت کو آگاہ کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں