مریم اورنگزیب

وفاقی حکومت کا نوجوان طالبعلموں کے لئے دوبارہ لیپ ٹاپ سکیم شروع کرنے کا اعلان

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) وفاقی حکومت نے نوجوان طالبعلموں کے لئے دوبارہ لیپ ٹاپ سکیم شروع کرنے کا اعلان کر دیا، وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف نے اپنے دور میں کوئی منصوبے نہیں لگائے ، پی ٹی آئی حکومت نے الزام تراشی کرنے کے سوا کچھ نہیں کیا ، پی ٹی آئی نے صرف گالی اور الزام اور تقسیم کی سیاست کی ، پی ٹی آئی نے دور حکومت میں ہمارے ہر منصوبے پر تختیاں لگائیں ۔

وزیراعظم شہباز شریف نے نواز شریف کے پروگراموں کی بحالی کاکام شروع کیا ، ن لیگ دور میں شروع 60فیصد منصوبے بندکروادیئے گئے تھے ، عوام کو مختلف سکیموں کے تحت دیے جانے والے چھوٹے اور بڑے قرضوں کو بند کردیا گیا تھا، ن لیگ کے قائد محمد نواز شریف کے شروع کیے گئے منصوبے کو دوبار بحال کررہے ہیں ۔ اس موقع پر معاون خصوصی شیزا فاطمہ نے کہا کہ 2022میں ہم نے مشکل وقت میں حکومت سنبھالی ، وزیراعظم شہبا زشریف کی حکومت میں آنے کے بعد پہلی ترجیح معیشت میں استحکام تھا ، چند میٹنگز میں وزیراعظم نے مجھے ذمہ داریاں سونپیں ، پاکستان کی 68فیصد آبادیعنی 15کروڑ افرادکیلئے جامع منصوبے بنانااولین ترجیح ہے ، 2011میں شہباز شریف نے ای پروگرام اور لیپ ٹاپ پروگرام شروع کیا تھا ، یوتھ پروگرام کون لیگ 2012سے ہی لیڈ کررہی ہے ، چار سال میں لاکھوں لوگوں کو انٹرشپ دی گئی ، ن لیگ نے اپنے دور کے اپنے دور کے چار سال میں 5لاکھ لیپ ٹاپ تقسیم کئے ، گزشتہ حکومت نے نوجوانوں کیلئے ایک بھی منصوبہ شروع نہیں کیا ۔

شہباز شریف نے حکومت میں آتے ہی نوجوانوں کے پرواگراموں کو بحال کیا ۔ وفاقی حکومت کی جانب سے لیپ ٹاپ پروگرام دوبارہ شروع کیا جارہا ہے ، وزیراعظم اس سال ایک لاکھ لیپ ٹاپ دیں گے ، وزیراعظم کے قریب نوجوانوں کا روز گار سب اہم چیز ہے ، ن لیگ کے قائد نواز شریف کی ہدایت پر اس پالیسی پر کام کیا گیا ہے ، پاکستان میں ڈیمانڈ اینڈ سپلائی میں بہت خلا ہے ڈینسٹ ورک کے تحت ہر سال 20لاکھ نوجوانوں کو نوکریاں دینی ہیں، نہ صرف منصوبہ بنایا بلکہ سکل ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت ایک لاکھ نوجوانوں کو ٹریننگ دی جائیگی ، تاکہ نوجوانوں میں ہنر پیدا ہو ، ہمارا زیادہ فوکس آئی ٹی پر ہے تاکہ ہمارے نوجوانوں کو گھر بیٹھے روزگار مہیا ہوسکے ۔ پاکستان دنیا کا چوتھا بڑا فری لائنسنگ اکانومی میں شامل ہے ، ایمزون میں پاکستان تیسرا بڑا ملک بن گیا ، ہمارے نوجوانوں میں استعداد بہت ہے ، 15کروڑ نوجوان ہمارا اثاثہ ہیں ،اگر ہم نے انہیں بہتر طریقے سے استعمال کیا تو ملکی ترقی کو کوئی نہیں روک سکتا ، اس پروگرام کے ساتھ ساتھ ای بزنس پروگرام اب بزنس اینڈ ایگریکلچر پروگرام ہوگیا ہے ، اس کے اجازت ہمیں مل چکی ہیں۔ PMYUB.UOB.PKایپلی کیشن بنائی گئی ہیں، موبائل فونز میں پی ایم وائے یو بی ایپلی گیشن کے ذریعے قرضے کیلئے اپلائی کرسکتے ہیں، قرضے کا مقصد ملک میں کاروبار کو فروغ دینا ہے ، جاب سیکٹرز کی بجائے اس ایپلی کیشن کے ذریعے اپنے کاروبار کو فروغ دے سکتے ہیں اس پروگرام میں 5لاکھ کے قرضے بلاسود ہیں اس کی کوئی ضمانت بھی نہیں ہے ، چھوٹا کاروبار شروع کرنے والی خواتین کی زیادہ حوصلہ افزائی کریں گے ، بینکوں سے بھی بات چیت کی تاکہ اس قرضے تک رسائی آسان ہوسکے ، پہلا رابطہ قرضہ میں 5فیصد ہے ، باقی سارا انٹرسٹ حکومت اٹھائے گی ، 15سے 75لاکھ قرضہ 60فیصد نوجوان حاصل کرسکتے ہیں۔

چھوٹے کاروبار کرنے والے افراد سے گزارش ہے کہ اپنے کاروبار کو بڑھانے کیلئے ان قرضوں کا استعمال کریں ، آٹھ سے نو سال اس کی ری پیمنٹ ہے ، آسان اقساط نوجوانوں کو مہیا کی جائیں گی ۔ سپورٹس بھی ہمارے لئے بہت ضروری ہے ، چار سال نوجوان نسل کو خراب اور سماجی رویوں کو تباہ کیا گیا ، کنٹینرز پر کھڑے ہوکر نوجوانوں کی ثقافت کا مذاق اڑایا گیا ، کھیل نوجوان نسل میں باقاعدہ کریکٹر بلڈنگ کرتے ہیں سپورٹس کے ذریعے بھی تک گزشتہ آٹھ ماہ میں تقریبا 35ہزار بچے حصہ لے چکے ہیں ، نیشنل لیول پر ہاکی کے ٹرائل شروع کیے گئے ہیں ،چاروں صوبوں میں 5،5مختلف مقامات پر ٹرائل شروع کئے گئے ہیں ، ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام مکمل ہوگیا ہے اور اس کی نیشنل لیگ انشاءاللہ سال کے آخر میں منعقد ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں