وزیراعلی چودھری پرویز الٰہی

جنرل(ر)باجوہ کے عمران پر بہت احسانات ہیں احسان فراموشی نہ کی جائے، پرویز الہی

لاہور (نمائندہ خصوصی ) وزیر اعلی پنجاب چودھری پرویز الہی نے کہا ہے کہ اب اگر جنرل (ر)باجوہ کے خلاف کوئی بات کی گئی تو سب سے پہلے میں بولوں گا، میری پارٹی بولے گی، جنرل(ر)فیض ہمارے خلاف تھے، میں نے جنرل(ر)باجوہ کو فیض کے بارے میں بتایا تو فیض نے کہا کہ عمران خان کا حکم ہے۔

اپنے ایک بیان میں چودھری پرویز الہی نے کہا ہے کہ جب خان صاحب جنرل (ر)باجوہ کے خلاف بات کر رہے تھے، تو مجھے بہت برا لگا، جنرل (ر)باجوہ ہمارے محسن ہیں، محسنوں کے خلاف بات نہیں کرنی چاہیے، میں سمجھتا ہوں کہ جنرل (ر) باجوہ کے ان پر بہت احسانات ہیں، احسان فراموشی نہ کی جائے۔ چودھری پرویز الہی کہا کہ اب اگر جنرل (ر) باجوہ کے خلاف کوئی بات کی گئی تو سب سے پہلے میں بولوں گا، میری ساری پارٹی بولے گی، جنرل (ر) فیض نے بہت زیادتیاں کیں، ہمیں اندر کرنے کی کوشش کی، ہمارے خلاف تھے، میں نے جنرل (ر)باجوہ کو فیض کے بارے میں بتایا تو فیض نے کہا کہ عمران خان کا حکم ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان تو مونس الہی کو ساتھ نہیں بٹھاتے تھے، اس کے باوجود ہم نے عمران خان کا بھرپور ساتھ دیا، جب عمران خان نے کہا کہ اسمبلی توڑ دو تو ہم نے فورا حامی بھر لی، ہم عمران خان اورپی ٹی آئی کے مخالف نہیں ساتھی ہیں لیکن اپنے محسنوں کو فراموش نہیں کر سکتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں