شبہاز گل

ہائیکورٹ نے شہباز گِل کی حفاظتی ضمانت میں توسیع کر دی،وفاقی سیکریٹری داخلہ ،سیکریٹری ہوم پنجاب بروز جمعرات طلب

لاہور ( گلف آن لائن) لاہور ہائی کورٹ نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گِل کی حفاظتی ضمانت میں توسیع کرتے ہوئے وفاقی سیکریٹری داخلہ اور سیکریٹری ہوم پنجاب کو بروز جمعرات کو طلب کر لیا۔گزشتہ روز عدالت عالیہ معزز جسٹس طارق سلیم شیخ نے شہباز گِل کی حفاظتی ضمانت سے متعلق کیس کی سماعت کی ۔پی ٹی آئی رہنما شہباز گِل عدالت میں پیش ہوئے ۔ شہباز گِل کے وکیل رمضان چوہدری نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پولیس کی پہلی رپورٹ کے مطابق شہباز گل پر 3 مقدمے ہوئے تھے، عدالت میں دی گئی رپورٹ میں ایک مقدمہ چھپایا گیا۔وکیل رمضان چوہدری نے کہا کہ عدالت میں جان بوجھ کر مانگا منڈی کا ایک مقدمہ چھپایا گیا۔

رپورٹ میں یہ بھی نہیں کہا گیا کہ شہباز گل کی گرفتاری مطلوب نہیں ، کیا اعلی عدالتوں کے ساتھ ان کا یہ رویہ ہو گا کہ حقاق چھپایں ۔وفاقی حکومت کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد کی حد تک شہباز گِل کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں ہے۔جسٹس طارق سلیم نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ کہہ رہے ہیں نیا مقدمہ نہیں جبکہ پراسیکیوٹر نے سپریم کورٹ میں کہا کہ مقدمہ درج ہے ، آپ کیسز درج کرتے ہیں میڈیا ہاپ ہوتی ہے آپ کینسل کر دیتے ہیں ، سیاسی انتقام کے نکتے کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ، کسی بھی شہری کے حقوق کا تحفظ بھی کرنا ہے۔جس پر سرکاری وکیل نے کہا کہ میرے علم میں ایسا کچھ نہیں کہ نیا مقدمہ درج ہوا ۔

جس پر عدالت نے کہا کہ تو پھر اسی پراسیکیوٹر کو بلا لیتے ہیں جس نے سپریم کورٹ میں بیان دیا ، وفاقی سیکریٹری داخلہ اور سیکریٹری ہوم کو بھی بلا لیں۔ عدالت نے شہباز گل کے خلاف تمام مقدمات کا ریکارڈ طلب کر لیا ۔عدالت نے وفاقی سیکریٹری داخلہ اور سیکریٹری ہوم پنجاب کو کل بروز جمعرات کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی ۔واضح رہے کہ شہباز گِل نے حفاظتی ضمانت اور مقدمات کی تفصیلات کے لیے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کر رکھا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں