لاہور ہائیکورٹ

اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کیلئے دائر درخواستوں پر حکومت کو پیشرفت سے آگاہ کرنے کیلئے مہلت دیدی گئی

لاہور(گلف آن لائن)لاہورہائیکورٹ نے اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کے لئے دائر درخواستوں پر حکومت کو پیشرفت سے آگاہ کرنے کیلئے مہلت دیتے ہوئے سماعت 27جون تک ملتوی کر دی ۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شجاعت علی خان نے اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے سے متعلق دائر درخواستوں پر سماعت کی۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن نے عدالت کو بتایا کہ الیکشن کمیشن نے متعلقہ اداروں کو اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کی ہدایات جاری کررکھی ہیں۔جسٹس شجاعت علی خان نے کہا کہ یہ کام تمام اداروں کے تعاون سے ممکن ہونا ہے ،ہماری بھائی بہن باہر ہیں اور ہم ان کا حق دے رہے ہیں اور یہ ان کا بنیادی حق بھی ہے۔سیکرٹری الیکشن کمیشن نے بتایا کہ الیکٹرانک ووٹنگ میشن تیار کرلی ہے اور اس پراجیکٹ میں فنڈز درکار ہیں، ہم جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے کے پراجیکٹ لانا چاہتے ہیں ۔جسٹس شجاعت علی خان نے استفسار کیا کہ حکومت کب تک فنڈز جاری کرے گی۔ سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اس پراجیکٹ کے لیے نادرا کو فنڈز جاری کیے گئے تاہم اس طرح کام نہیں ہوا۔

اس پر جسٹس شجاعت علی خان نے ریمارکس دئیے کہ اگر ایسا ہے تو ہم معاملہ نیب کو بھیج دیتے ہیں۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اب معاہدہ جلد ہونے والا ہے اور کام شروع ہوچکا ہے۔سرکاری وکیل نے بتایا کہ حکومت نے اسمبلی سے بل منظور کیا ہے جو اس وقت صدر پاکستان کے پاس منظوری کے لیے پڑا ہے اور اس کی حتمی منظوری کے بعد عدالت کو باقاعدہ آگاہ کیا جائے گا۔سرکاری وکیل نے مزید پیشرفت کے لیے عدالت سے مہلت کی استدعا کردی جسے عدالت نے منظورکرتے ہوئے سماعت 27 جون تک ملتوی کردی

اپنا تبصرہ بھیجیں