حلیم عادل شیخ

اینٹی انکروچمنٹ حکام نے ضمانت منسوخی کے بعد حلیم عادل شیخ کو حراست میں لے لیا

کراچی (گلف آن لائن) اینٹی انکروچمنٹ حکام نے ضمانت منسوخی کے بعد پی ٹی آئی رہنما اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرحلیم عادل شیخ کو حراست میں لے لیاہے، حلیم عادل شیخ پر سرکاری زمین پر قبضے کا الزام ہے۔بدھ کو اینٹی انکروچمنٹ ٹربیونل میں اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی۔عدالت نے حلیم عادل شیخ کی ضمانت منسوخ کردی، اینٹی انکروچمنٹ حکام نے حلیم عادل شیخ کو حراست میں لے لیا۔

دوران سماعت اینٹی انکروچمنٹ نے عدالت کو بتایا کہ حلیم عادل شیخ پر سرکاری زمین پر قبضہ کا الزام ہے۔ ملزم تحقیقات میں شامل نہیں ہو رہے ہیں۔ 12 نوٹسز کے باوجود حلیم عادل شیخ بیان ریکارڈ کرانے نہیں آئے۔عدالت نے اینٹی انکروچمنٹ حکام اور ملزم کے وکیل کے دلائل سننے کے بعد حلیم عادل شیخ کی ضمانت منسوخ کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں